اللہ کا ذکر کرنے کے فوائد اور فضائل
اسلام

اللہ کا ذکر کرنے کے فوائد اور فضائل

بعض اوقات زندگی کبھی نہ ختم ہونے والی خوشی کی طرح محسوس ہوتی ہے، کام پر جانے سے، گھر میں کام کرنے اور گھر والوں کی دیکھ بھال کرنے، ہفتہ بھر چلنے والے کام اور رشتہ داروں سے ملنے تک، کبھی نہ ختم ہونے والی خوشی کی طرح محسوس ہوسکتی ہے۔ مجھے غلط مت سمجھو۔. یہ سب قیمتی سرگرمیاں ہیں۔ تاہم، بعض اوقات ہم مادی دنیا کے روزانہ حصول میں اپنے روحانی پہلو کو نظرانداز کرتے ہیں۔

ذکر کے فضا‏ئل

یہ خاص طور پر ان خواتین کے بارے میں سچ ہوسکتا ہے جو اپنے کیریئر کو روکنے کے باوجود اکثر غیر منصفانہ طور پر کام اور خاندانی ذمہ داریوں کے ساتھ رہ جاتی ہیں۔ دین اور دنیا کے مابین صحیح توازن حاصل کرنا بعض اوقات مشکل ہوسکتا ہے، اور اس سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھانے کے لئے اپنے مذہب اور روحانی طور پر غور کرنے کے لئے وقت تلاش کرنا مشکل ہوسکتا ہے۔

ہم ہر روز مزید قرآن پڑھنے کا ارادہ کرسکتے ہیں، یا اپنے دین کے بارے میں مزید معلومات حاصل کرنا چاہتے ہیں، یا نفل نمازیں ادا کرسکتے ہیں لیکن اپنی مصروف زندگی کی وجہ سے ہم ایسا کرنے سے قاصر ہیں۔ یہیں سے ذکر، اللہ کی یاد، آپ کے دن کا ایک اہم حصہ بن سکتی ہے۔ جب ہمارے پاس وقت کی کمی ہوتی ہے تو وہ اللہ کی عبادت کا ایک بہت ہی طاقت ور اور آسان طریقہ ہے، جس میں بہت سارے فوائد اور خوبیاں ملتی ہیں۔ اللہ کا ذکر بھی عبادت کی ایک شکل ہے۔

وہ جو ایمان لائے اور ان کے دل اللہ کی یاد سے چین پاتے ہیں، سن لو اللہ کی یاد ہی میں دلوں کا چین ہے۔

سورة الرعد آیت 28

لازمی طور پر نماز کے بعد ہم میں سے بیشتر عام طور پر سبحان اللہ، (خدا کا شکر ہے) یا زیادہ لمبا ترجمہ (ہر نامکملیت اور ضرورت سے بالاتر اللہ ہے: وہ پاک اور کامل ہے)، الحمدللہ (تمام حمد خدا کی طرف ہے) اور اللہ اکبر (خدا سب سے بڑا ہے) ان کو تینتیس بار پڑھتے ہیں۔ اگرچہ ہم ان الفاظ کو باقاعدگی سے صلاح کے بعد سن سکتے ہیں، لیکن ہم اسے غیر حاضر اور حقیقی الفاظ پر واقعی غور کیے بغیر پڑھتے ہیں۔

اللہ نے مومنوں کے لئے اسلام کو اتنا آسان بنا دیا ہے کہ یہاں تک کہ مختصر ترین سورہ اور آیات بھی سب سے بڑا اجر وصول کرسکتے ہیں۔ مثال کے طور پر، الحمدللہ کی تلاوت کرنے کا صلہ یہ ہے کہ وہ قیامت کے دن ترازو کو نیک اعمال سے بھر دے گا۔ چونکہ ذکر بہت آسان ہے اور اس کا بہت بڑا اجر ہے، یہ عبادت کی ایک قسم ہے جسے ہمیں اپنی روزمرہ کی زندگی میں اضافہ کرنے کی کوشش کرنی چاہئے۔

اے اہل ایمان خدا کا بہت ذکر کیا کرو۔

سورة الأحزاب آیت 41

ذکر کے اثرات

ہم میں سے اکثر معنی سمجھے بغیر ہی سورہ اور آیات عربی میں پڑھتے ہیں۔ آپ جو کچھ پڑھ رہے ہیں اسے سمجھنے سے آپ تلاوت کا پورا فائدہ حاصل کرسکتے ہیں۔ اگرچہ زندگی تیز رفتار ہوسکتی ہے لیکن یہ اچھا ہے کہ کچھ وقت قرآن مجید اور طرز زندگی کے الفاظ پر غور کریں جو سنت میں بیان ہوئے ہیں۔

اللہ کی تعریف اور تسبیح کرکے ہم اس کا شکر ادا کر رہے ہیں اور اس کی عظمت کو تسلیم کر رہے ہیں۔ ہم تسلیم کر رہے ہیں کہ ہمارے پاس اس کے بغیر کوئی طاقت نہیں ہے، کیونکہ اس کے پاس ہر چیز پر قدرت ہے۔ ایک بار جب ہم واقعتاً یہ سمجھ چکے ہیں تو ہم سمجھ سکتے ہیں کہ ہم دراصل اپنی زندگیوں کے کنٹرول میں نہیں ہیں، اور یہ صرف اللہ کی مدد اور مرضی سے ہی ہے کہ ہم اپنی زندگی میں چیزیں حاصل کرسکیں۔

یہ خدا کے ساتھ اپنے تعلقات کو مستحکم کرنے کا ایک بہت ہی سیدھا اور طاقتور طریقہ ہے، کیونکہ آپ ہر چیز کے لئے اللہ پر انحصار کرنا شروع کرتے ہیں اور دوسرے لوگوں پر انحصار نہیں کرتے ہیں۔ اللہ اس سے محبت کرتا ہے جو اس کی تعریف اور تسبیح کرتا ہے، اور آپ سے اس کی محبت بڑھ جاتی ہے۔  اللہ کی محبت اور رحمت سے ہی آپ کی طرف سے جواب دیا گیا ہے۔ یہ ایک بہت ہی خاص رشتہ ہے جو خاص طور پر اس آسان، خالص اور عمدہ عبادت کے ذریعہ تجربہ کیا جاتا ہے۔

آپ اپنے دن میں مختلف اوقات میں صرف یہ کام کرکے ہی نہیں بلکہ آپ روزانہ ذکر کرنے کی مقدار میں اضافہ کرسکتے ہیں۔ مثال کے طور پر، آپ کے روزانہ سفر پر، سفر کرتے وقت، جب آپ کسی ڈاکٹر کی تقرری جیسے کسی چیز کا انتظار کر رہے ہوتے ہیں، جب آپ اپنے کام انجام دیتے ہیں، جب آپ اپنے کسی دوسرے کام میں دس منٹ کا فاصلہ رکھتے ہیں، جب آپ کسی چیز سے پریشان ہوجاتے ہیں (اپنے آپ کو پرسکون کرتے ہیں) اور اسی طرح کے کاموں کے دوران آپ آرام سے تسبیح پڑھ سکتے ہیں۔

جب آپ نے اپنے دن میں باقاعدگی سے ذکر کرنے کی عادت بنا لی ہے تو آپ کو معلوم ہوگا کہ آپ اپنے آپ کو اللہ سے زیادہ جڑے ہوئے محسوس کرتے ہیں، جو ایک بہت بڑا احساس ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ ذکر کا عمل آپ کے دماغ کو اللہ پر مستقل طور پر مرکوز کرتا ہے، جیسے مراقبہ آپ کے دماغ سے خلفشار دور کرنے کے لئے کس طرح کام کرتا ہے۔ اس سے آپ کے دماغ اور جسم پر فوری طور پر پرسکون احساس ہوتا ہے، اور آپ کے دماغ سے منفی سوچ کو دور کرتا ہے۔ جتنا آپ ذکر پر عمل کریں گے اتنا ہی آپ یہ عبادت اور کرنا چاہیں گے۔

حوالہ جات

ایک: قرآن ریڈینگ

دو: آرکائیو سیاست

نمایاں تصویر: پکسلز

Print Friendly, PDF & Email

مزید دلچسپ مضامین

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *